Sovereign Pakistan

Islam,News,Technology,Free tips and tricks,History,Islamic videos,Pakistan's prosperity, integrity,sovereignty,

Image result for Earn Online 728x90

Thursday, December 15, 2016

The dead reckoning, the memories of the 1971 Bangladesh War

اکہتر کے اندرونی حقائق
واشنگٹن کے ولسن انٹرنیشنل سینٹر فار سکالرز میں مارچ 2011 میں ایک تقریب منعقد ہوئی۔ تقریب بھارتی صحافی اور یونیورسٹی آف آکسفورڈ کے شعبہ سیاسیات اور بین االاقوامی تعلقات کی سینئیر ریسرچ ایسوسی ایٹ شرمیلا بوس کی کتاب کا تنقیدی تعارف پیش کرنے کے لئے منعقد کی گئی تھی ۔
کتاب کا نام تھا 
"The dead reckoning, the memories of the 1971 Bangladesh War"
شرمیلا بوس بھارت کی تحریکِ آزادی کے راہنما سبھاش چندر بوس کی پوتی ہیں۔ بین الاقوامی سطح پہ محقق اور سیاسیات کے شعبے پر سکالر کے طور پر جانی جاتی ہیں۔ ان کی کتاب نے اشاعت کے بعد نہ صرف پاکستان بنگال اور بھارت کی عوام میں کھلبلی مچا دی بلکہ اس کتاب کے تلخ حقائق کی گونج بھارتی ایوانوں میں بھی سنائی دی گئی۔
شرمیلا بوس نے اپنی کتاب میں سن اکتہر کی جنگ میں بھارت کے کردار کا پردہ چاک کرتے ہوئے لکھا ہے کہ میں نےسینکڑوں ایسے بنگالیوں کے انٹرویوز کیے جو اس جنگ کے چشمِ دید گواہ ہیں اور مجھے کوئی ایک بھی شہادت نہیں ملی جس کی بنیاد پر میں یہ کہوں کہ پاکستانی فوجیوں نے بنگالی خواتین کے ساتھ زیادتیاں کی ہوں۔ وہ مزید لکھتی ہیں کہ پاکستان آرمی پر جو الزام لگایا جاتا ہے کہ بنگلہ دیش میں لاکھوں بنگالیوں کا قتل کیا اس کے بھی کوئی شواہد موجود نہیں ہیں۔ بلکہ بھارت اور بنگلہ دیش آج تک اس الزام کا کوئی ایک بھی ٹھوس ثبوت پیش کرنے میں یکسر ناکام رہےہیں۔ بھارت ان نام نہاد قبروں کا سائنسی معائنہ کروانے سے بھی ہچکا رہا ہے کیوں کہ ایسا ہوا تو بھارت کے جھوٹ کا پول کھل جائے گا۔ انہوں نے لکھا کہ بنگال کی کوئی ایک بھی مستند سرکاری دستاویز ایسی نہیں جس میں درج ہو کہ پاکستانی فوج نے نہتے بنگالیوں کا قتلِ عام کیا ۔
اپنی کتاب میں بڑی وضاحت کے ساتھ شرمیلا چندر بوس نے یہ حقیقت بھی بیان کی ہے کہ بنگال میں بھارت نے مکتی باہنی کے گوریلوں کو تربیت دے کر بھیجا جنہوں نے وہاں قتل و غارت گری کا بازار گرم کیا اور ان کی ڈالی گئی کاروائیاں بڑے منظم انداز کے پراپگینڈے کے زریعے پاکستانی فوج کے زمے لگائی گئیں۔
کتاب ڈیڈ ریکننگ میں مصفنہ شرمیلا بوس مزید لکھتی ہیں کہ بدترین مظالم جو بنگال میں ہوئے وہ ان بنگالی قوم پرستوں نے اپنے ان لوگوں پر ڈھائے جو پاکستان سے علیحدگی نہیں چاہتے تھے۔کیوں کہ بنگال میں جو قتلِ عام پاکستان کے زمے لگایا جاتا ہے وہ اس وقت ہوا جب پاکستانی فوج سرنڈر کر چکی تھی۔ ایک سرنڈر کر دینے والی فوج ان لوگوں کو کیسے مار سکتی ہے جن کا الزام لگایا جاتا ہے۔ درحقیقت یہ انسانیت سوز جرائم بنگالی قوم پرستوں نے اپنے ہی لوگ پر کیے تھے























No comments:

Post a Comment

Need Your Precious Comments.

Fashion

Popular Posts

Beauty

Mission of Sovereign Pakistan

SP1947's Major Purpose is To Educate and Inform the People of Pakistan about Realty and Facts. Because its Our Right to Know What is Realty and Truth..So Come and Join Us and Share Sp1947.blogspot.com with your Friends Family and Others.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Sp1947.blogspot.com is Providing Daily Urdu Columns, Urdu Articles, Urdu Editorials, Top Events, Investigative Reports, Corruption Stories in Pakistan from Top Pakistani Urdu News Newspapers Like Jang, Express, Nawaiwaqt, Khabrain.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Sp1947.blogspot.com Has a Big Collection of Urdu Columns of Famous Pakistani Urdu Columnists Like Columns of Javed Chaudhry, Columns of Hamid Mir, Columns of Talat Hussain, Columns of Dr Abdul Qadeer Khan, Columns of Irfan Siddiqui, Columns of Orya Maqbool Jan, Columns of Abdullah Tariq Sohail, Columns of Hasan Nisar, Columns of Ansar Abbasi, Columns of Abbas Athar, Columns of Rauf Klasra and Other Pakistani Urdu Columns Writers on Burning Issues and Top Events in Recent Pakistani Politics at One Place.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Disclaimer
===========
All columns, News, Special Reports, Corruption Stories Published on this Website is Owned and Copy Right by Respective Newspapers and Magazines, We are Publishing all Material Just for Awareness and Information Purpose.

Google+ Badge

Travel

Followers