Sovereign Pakistan

Islam,News,Technology,Free tips and tricks,History,Islamic videos,Pakistan's prosperity, integrity,sovereignty,

Image result for Earn Online 728x90

Thursday, January 28, 2010

القاعدہ اور طالبان کی حمایت

انور سِن رائے
بی بی سی اردو ڈاٹ کام، لندن




میں القاعدہ اور طالبان کی مخالفت نہیں کر سکتا ہوں لیکن میں ان کی حمایت بھی نہیں کر سکتا اور میں اکیلا نہیں ہوں۔ میری طرح کے اور بہت سے ہیں۔ اتنے بہت سے کہ تمام تر احتیاط کے ساتھ ہمیں اکثریت کہا جا سکتا ہے۔ ہم نہ صرف ان ملکوں کے شہری ہیں جن پر ’اسلامی ممالک‘ ہونے کا دھبہ لگا ہوا ہے بلکہ ان ملکوں کے بھی جہاں روشن خیالی اور نام نہاد آزادی میں ہماری کایا کلپ ہو چکی ہے۔

اگرچہ القاعدہ اور طالبان ہمارے لیے اصل خطرہ بن گئے ہیں۔ ہمارے لیے جو ’سب کچھ‘ کرنے کے ساتھ ساتھ مسلمان بھی رہنا چاہتے ہیں۔ زندگی جیسی بھی گزاریں ہم دفن مسلمانوں کی طرح ہونا چاہتے ہیں۔ مرنے کے بعد ایک قبر اور اس پر آنے والوں کا خواب بھی دیکھتے ہیں۔ اگر کوئی ہمیں کافر کہے تو ہمیں غصہ بھی آتا ہے اور غصے کے اظہار کی جگہ نہ ہو تو کم از کم برا ضرور 
لگتا ہے۔
بے شک امریکہ میں ہماری تلاشی سارے کپڑے اتروا کر لی جائے یا کوئی بھی اور سلوک یا برتاؤ کیا جائے، ہم نہ تو امریکہ اور ترقی یافتہ مغربی ملکوں میں جانے کے خواب دیکھنا بند کر سکتے نہ ہی خود کو مسلمان سمجھنا اور کہنا چھوڑ سکتے ہیں۔

ہم ایسے ہیں کہ یہ سوچ بھی نہیں سکتے کہ ہماری بیٹیاں شادی کے بغیر کسی کے ساتھ شریکِ حیات بن کر رہیں یا ان سے اس طرح کا تعلق رکھیں یا محبت اور شادی کے لیے کسی غیر مسلمان کا انتخاب کر لیں۔


بیٹوں کے معاملے میں ہم قدرے نرم واقع ہوئے ہیں۔ بیٹے اگر شادی سے پہلے جنسی تعلقات رکھیں تو ہمیں برا نہیں لگتا اور لڑکی مسلمان نہ ہو تو بالکل ہی برا نہیں لگتا بلکہ کچھ فخر سا ہوتا ہے۔ اگرچہ کچھ ڈر سا لگتا ہے کہیں شادی کا چکر نہ چل جائے اور شادی ہی ہو جائے تو اگلی نسل کے مسلمان ہونے کی فکر پڑ جاتی ہے۔

ہمیں شادیوں کے لیے مذہب بدلنا پسند نہیں لیکن اگر ہمارے بچوں کے لیے دوسرے مذہب بدلیں تو ہمیں خوشی ہوتی ہے۔ اگر ایسا نہ ہو تو ہم اندر ہی اندر مرنا شروع ہو جاتے ہیں اور شرمسار رہتے ہیں ایسی باتوں کو چھوت کی بیماری کی طرح چھپاتے پھرتے ہیں۔

ہم قرآن نہیں پڑھتے۔ ہم میں سے کچھ تو پڑھ ہی نہیں سکتے اور بہت سے پڑھ کر پڑھنا بھول چکے ہیں اور بہت سے اسے بے سود سمجھنے لگے ہیں لیکن قرآن کی توہین تو کیا مخالفت بھی سہنا ہمارے لیے مشکل ہو جاتا ہے۔ نماز پڑھیں نہ پڑھیں لیکن مسجد کو کچھ ہو جائے یہ ہم سے برداشت نہیں ہوتا۔ شراب اور سور کو حرام سمجھتے ہیں لیکن شراب پی لیتے ہیں سور نہیں کھا سکتے۔ گویا کتنی ہی باتیں ہیں جو ہم میں نہیں ہونی چاہیں اور ہیں اور کتنی ہی باتیں ہیں جو ہم میں ہونی چاہییں اور نہیں ہیں۔


ان ساری باتوں کے ساتھ ہم جیسے بھی ہیں مسلمان ہیں۔ خود کو مسلمان کہتے اور سمجھتے ہیں اور کبھی کبھی تو ہمیں اس بات پر تکلیف بھی ہوتی ہے کہ القاعدہ یا طالبان کو اس لیے مارا جائے کہ وہ مسلمان ہیں اور اپنے عقیدے کے مطابق اپنے طریقے سے زندگی گزارنا چاہتے ہیں۔


ایسا نہیں کہ ہمیں طالبان سے کوئی شکایت نہیں۔ ہے اور یہ ہے کہ وہ ہمیں اپنے جیسا بنانا چاہتے ہیں۔ یہ بھی کوئی ایسی قابلِ اعتراض بات نہیں ہے لیکن ان کا یہ سمجھنا کہ جو ان کے ساتھ نہیں ہے ان کا دشمن ہے اور اس کا مارا جانا یا اس کا نقصان عین اسلام ہے، یہ ہمیں قبول نہیں۔


پتہ نہیں آپ کی رائے کیا ہو لیکن ہمیں تو القاعدہ و طالبان اور امریکہ اور اس کے اتحادیوں میں کچھ درجوں کے علاوہ کوئی فرق نہیں لگتا۔ درجوں کا فرق بھی یہ ہے کہ ایک فریق کے پاس قوت کم ہے اور ایک کے پاس زیادہ لیکن دونوں کا انحصار ڈنڈے پر ہے اور اس لیے جب ہم القاعدہ اور طالبان کی حمایت کرنا چاہتے ہیں تو وہ ہمیں اپنی حمایت نہیں کرنے دیتے اور جب ان کی مخالفت کرنا چاہتے ہیں تو امریکہ اور اس کے اتحادی مخالفت کرنے کے قابل نہیں چھوڑتے۔


*BBC Urdu‬ - *قلم اور کالم‬ - *القاعدہ اور طالبان کی حمایت‬

No comments:

Post a Comment

Need Your Precious Comments.

Fashion

Popular Posts

Beauty

Mission of Sovereign Pakistan

SP1947's Major Purpose is To Educate and Inform the People of Pakistan about Realty and Facts. Because its Our Right to Know What is Realty and Truth..So Come and Join Us and Share Sp1947.blogspot.com with your Friends Family and Others.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Sp1947.blogspot.com is Providing Daily Urdu Columns, Urdu Articles, Urdu Editorials, Top Events, Investigative Reports, Corruption Stories in Pakistan from Top Pakistani Urdu News Newspapers Like Jang, Express, Nawaiwaqt, Khabrain.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Sp1947.blogspot.com Has a Big Collection of Urdu Columns of Famous Pakistani Urdu Columnists Like Columns of Javed Chaudhry, Columns of Hamid Mir, Columns of Talat Hussain, Columns of Dr Abdul Qadeer Khan, Columns of Irfan Siddiqui, Columns of Orya Maqbool Jan, Columns of Abdullah Tariq Sohail, Columns of Hasan Nisar, Columns of Ansar Abbasi, Columns of Abbas Athar, Columns of Rauf Klasra and Other Pakistani Urdu Columns Writers on Burning Issues and Top Events in Recent Pakistani Politics at One Place.
------------------------------------------------------------------------------------------------------------
Disclaimer
===========
All columns, News, Special Reports, Corruption Stories Published on this Website is Owned and Copy Right by Respective Newspapers and Magazines, We are Publishing all Material Just for Awareness and Information Purpose.

Google+ Badge

Travel

Followers